رات گئے تک موبائل کے استعمال سے بانجھ پن کا خطرہ، تحقیق

کراچی(این این آئی)کوئی مانے یا نہ مانے لیکن ہم میں سے بعض لوگ ایسے بھی ہیں جو سونے سے پہلے اپنے موبائل کو ضرور استعمال کرتے ہیں، چاہے وہ اس میں اپنی من پسند ویڈیو دیکھیں، چیٹنگ کریں یا پھر گیم کھیلیں۔

جیسا کہ ہمیں معلوم ہے کہ گیجٹس سے نکلنے والی بلیو لائٹ ہمارے لیے نقصان دہ ہے، لیکن اب نئی تحقیق میں مزید چونکا دینے والے انکشافات سامنے آئے ہیں۔

ورچوئل سلیپ 2020 کے ساتھ شیئر ہونے والی اس تحقیق کے مطابق یہ بات سامنے آئی ہے کہ رات کو دیر سے گیجٹ کو استعمال کرنے کا مردانہ بانجھ پن کے ساتھ گہرا تعلق ہے۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ موبائل فون سے نکلنے والی تابکاری کے باعث مرادنہ بانجھ پن کا خطرہ ہوتا ہے۔

اسی طرح عالمی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ دنیا بھر میں بانجھ پن کا پھیلا 15 سے 20 فیصد تک پہنچ گیا ہے جبکہ اس شرح میں مردوں کی تعداد 20 سے 40 فیصد ہے۔ مذکورہ تحقیق کے اعداد و شمار سے واضح ہے کہ ڈیجیٹل میڈیا ڈیوائسز اور الیکٹرونک گیجٹس بانجھ پن پر بڑی حد تک نظر انداز ہورہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

کورونا نے نوجوانوں کی ذہنی صحت پر شدید اثرات مرتب کئے، تحقیق

کراچی(این این آئی)ایک تحقیق کے مطابق عالمی وبا کورونا وائرس نے نوجوانوں کی ذہنی صحت …