اسپاٹ فکسنگ کیس: کرکٹر ناصر جمشید کو 17 ماہ قید کی سزا

اسپاٹ فکسنگ کیس: کرکٹر ناصر جمشید کو 17 ماہ قید کی سزا

مانچسٹر(ویب ڈسک) کراون کورٹ نے پاکستانی کے سابق کرکٹر ناصر جمشید کو اسپاٹ فکسنگ کیس میں 17 ماہ قید کی سزا سنائی ہے۔

اسپاٹ فکسنگ کیس میں کراون کورٹ نے کرکٹر یوسف انور اور محمد اعجاز کو بھی مختلف نوعیت کی سزا سنا دی ہے۔

عدالتی کارروائی کے بعد تینوں کرکٹرز کو عدالت سے گرفتار کرکے جیل بھجوا دیا گیا۔

خیال رہے کہ 10 دسمبر 2019 کو پاکستان کے سابق کرکٹر ناصر جمشید نے اسپاٹ فکسنگ میں ملوث ہونے کا اعتراف کرلیا تھا۔

سابق پاکستانی کرکٹر پر ایک ٹی 20 میچ میں ساتھی کھلاڑی کو رشوت دینے کا الزام تھا۔ برطانیہ کی نیںشنل کرائم ایجنسی نے اس معاملے کی تحقیقات کے بعد ملوث افراد کو گرفتار کیا تھا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ پہلے ہی ناصر جمشید پر دس سال کی پابندی عائد کرچکا ہے۔

خیال رہے کہ 22 اکتوبر 2018 کو پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے قومی ٹیم کے کھلاڑی ناصر جمشید کی سزا کے خلاف اپیل مسترد کر دی تھی۔

پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل ٹو) کے دوسرے ایڈیشن کے دوران اسپاٹ فکسنگ میں ملوث پائے جانے کے الزام میں ناصر جمشید پر دس سال کی پابندی لگائی گئی تھی، سزا پی سی بی کے اینٹی کرپشن ٹریبونل نے سنائی تھی۔

Google+ Linkedin

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

*
*
*