کرس گیل پی ایس ایل چھوڑ کر ویسٹ انڈیز روانہ

پاکستان سپر لیگ کے سیزن 6 میں کرس گیل کا سفر ختم ہوگیا، سری لنکا کے خلاف ہوم ٹی 20سیریز کیلیے کرس گیل وطن واپس لوٹ گئے۔

انھوں نے کوئٹہ کی 2 میچز میں نمائندگی کی، پیر کو لاہور قلندرز کے خلاف 40 بالز پر 68 کی اننگزبھی کھیلی۔ سری لنکا سے سیریز ختم ہونے کے بعد ضرورت پڑنے پر گیل دوبارہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم کوجوائن کرسکتے ہیں۔

یونیورس باس کے نام سے جانے والے کرس گیل پی ایس ایل کے چھٹے ایڈیشن میں شرکت کے لیے 15سال بعد پاکستان آئے تھے۔

کرس گیل نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی نمائندگی کرتے ہوئے ٹورنامنٹ کے افتتاحی میچ میں 24گیندوں پر 39 اور اگلے میچ میں 40گیندوں پر 68رنز کی برق رفتاراننگز کھیلی۔ کرس گیل نے پی ایس ایل کے ابتدائی دو ایڈیشنز، 2016میں لاہور قلندرز اور 2017میں کراچی کنگز کی نمائندگی کی تھی جبکہ دونوں ایڈیشنز متحدہ عرب امارات میں کھیلے گئے تھے۔

دوسری جانب کرس گیل کا کہنا ہے کہ وہ عالمی وبا کے اس مشکل وقت میں کرکٹ کھیلنے پر بہت خوش ہیں، ان حالات میں کرکٹ کھیلنا خوشی کی بات ہے،وہ پر امید ہیں کہ مستقبل میں حالات بہتر ہوجائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پندرہ سال بعد پاکستان آنا انہیں بہت اچھا لگا، احتیاطی تدابیر کے باعث ایونٹ کے ابتدائی دو میچز میں عوام کی حاضری محدود رہی مگر پھر بھی انہیں اسٹیڈیم میں تماشائیوں کو دیکھ کر خوشی ہوئی ہے۔

سری لنکا اور ویسٹ انڈیز کے مابین ٹی 20 انٹرنیشنل سیریز کی وجہ سےکرس گیل جلد وطن واپس لوٹ رہے ہیں، امکان ہے کہ وہ پی ایس ایل کے چھٹے ایڈیشن کی لاہور لیگ میں شرکت کریں گے۔

یاد رہے کہ سال 2006 میں ویسٹ انڈیز کرکٹ ٹیم کے ہمراہ پاکستان کا دورہ کرنے والے کرس گیل کا کہنا ہے کہ انہیں آج بھی ملتان ٹیسٹ میں اپنی 94رنز کی اننگز یاد ہے، پھر محمد یوسف اور یونس خان کی بیٹنگ کی وجہ سےانہیں تپتے سورج میں ایک طویل عرصے تک فیلڈنگ کرنی پڑی۔

یاد رہے کہ لاہور قلندرز کے لیگ اسپنر راشد خان بھی افغانستان کی سیریز کے باعث وطن واپس لوٹ گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

کرکٹرز کو میڈیا ٹریننگ کی ضرورت ہے، چیئرمین پی سی بی

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چئیرمین احسان مانی کا کہنا ہے کہ قومی کرکٹرز کو میڈیا …