‏پاکستان کرکٹ میں پہلی خاتون میچ ریفری کا تقرر

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈر نے تاریخ میں پہلی بار خاتون میچ ریفری کی تقرری کی ہے

پاکستان کرکٹ بورڈ نے حال ہی میں ڈومیسٹک کرکٹ سیزن 2020۔21 کے لیے آفیشلز کا اعلان کیا ہے، ثمن ذوالفقار ڈویلپمنٹ پینل میں شامل واحد خاتون میچ ریفری ہیں، ان کا تعلق شیخوپورہ سے ہے اور وہ 9 ماہ کی بیٹی کی ماں بھی ہیں۔

‏ثمن ذوالفقار کو پاکستان کی پہلی خاتون کرکٹ میچ ریفری ہونے کا اعزاز حاصل ہے وہ 2016 سے اس شعبے سے وابستہ ہیں لیکن ان کے علاوہ اب تک پاکستان میں کوئی اور خاتون اس شعبے منسلک نہیں ہوئی، اس طرح منفرد اعزاز ثمن ذوالفقار کو ہی حاصل ہے۔

انہوں نے اسپورٹس سائنسز میں ماسٹرز کرنے کے دوران اپنی دلچسپی کرکٹ میں بڑھتی محسوس کی ، تعلیم کے دنوں میں کرکٹ تو کھیلی اور امپائرنگ کے کورس کے بعد ریفری شپ کی طرف آ گئیں۔

ثمن ذوالفقار کاکہنا ہے کہ ملک میں کرکٹ کی پہلی میچ ریفری بننا میرے لیے اعزاز ہے، یہ موقع دینے پر پی سی بی کی شکر گزار ہوں۔

ثمن ذوالفقار نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ان کا اگلا ہدف پی ایس ایل اور انٹر نیشنل میچز سپر وائز کرنا ہے۔

ان کاکہنا ہے کہ پی سی بی خواتین کے لیے مواقع فراہم کر رہا ہے اور اس سے فائدہ اٹھانا چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں

قومی کھیل ہاکی کو ختم کرنے کی تجویز

اسلام آباد: پاکستان ہاکی فیڈریشن نے فنڈز نہ ہونے کے باعث قومی کھیل کو ختم …

%d bloggers like this: